Read/Present your poetry in Sahityapedia Poetry Open Mic on 30 January 2022.

Register Now
· Reading time: 1 minute

بھولی یادوں سے پھر آشنا کر لیا۔

بھولی یادوں سے پھر آشنا کر لیا۔
تیرے گھر کی گلی کا پتہ کر لیا۔
💖
وہ امانت کسی کی خیانت نہ کر.
دیکھ کر سوچتا ہوں یہ کیا کر لیا ۔
💖
تیری رسوائیاں نہ زمانے میں ہوں۔
سوچ کر خود کو ہی بے وفا کر لیا.
💖
یاد تیری مجھے جب ستانے لگی۔
اپنے رب سے بس رو کر دعا کر لیا۔
💖💖💖💖💖💖💖💖
ڈاکٹر صغیر احمد صدیقی
خیرا بازار بہرائچ یو پی انڈیا

29 Views
Like

Enjoy all the features of Sahityapedia on the latest Android app.

Install App
You may also like:
Loading...